عمران خان کوزبردست دھچکا ! عائشہ گلالئی کے بعد عائشہ نذیر بھی میدان میں آگئیں ، سنسنی خیز انکشافات

اسلام آباد(نیوزڈیسک)ملکی سیاست میں سوشل نیٹ ورکنگ سائٹس خاصی اہمیت اختیار کر گئی ہیں ، سیاست دان اپنے بیانات اور احساسات ان سائٹس کے ذریعے اپنے ووٹرز اور پاکستانی عوام تک پہنچاتے ہیں،لیکن اس کے علاوہ سیاسی جماعتوں کے سوشل میڈیا ڈیپارٹمنٹس بھی ان ویب سائٹس کا بے دریغ استعمال کرتے ہوئے جہاں اپنی پارٹی کی سرگرمیوں کو اجاگر کرتے ہیں وہیں اپنے سیاسی مخالفین پرکیچڑ اچھالنے کے لئے اسے استعمال کرتے ہیں۔تحریک انصاف کی…

"عمران خان کوزبردست دھچکا ! عائشہ گلالئی کے بعد عائشہ نذیر بھی میدان میں آگئیں ، سنسنی خیز انکشافات"

عمران قادری ملاقات، پیٹ کا این اے 120 میں پی ٹی آئی کی حمایت کا اعلان

عمران قادری ملاقات، پیٹ کا این اے 120 میں پی ٹی آئی کی حمایت کا اعلان لاہور (نیوز ڈیسک)حلقہ این اے 120 میں تحریک انصاف کی انتخابی مہم، عمران خان لاہور پہنچ گئے، طاہر القادری سے ملاقات، عوامی تھریک کا پی ٹی آئی کی حمایت کا اعلان، سیاسی مخالفین سرکاری وسائل استعمال کر رہے ہیں، ڈاکٹر یاسمین راشد کا الزام۔ چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان این اے 120 کے ضمنی انتخاب کی مہم چلانے…

"عمران قادری ملاقات، پیٹ کا این اے 120 میں پی ٹی آئی کی حمایت کا اعلان"

ٹوتھ پیسٹ کے 3 حیران کن استعمال

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) ٹوتھ پیسٹ کے تین حیران کے استعمال سے شاید آپ ناواقف ہونگے ۔ عام طورپر ٹوتھ پیسٹ کو دانتوں کی صفائی کیلئے استعمال کی جاتی ہے لیکن زیادہ تر شہریوں کو اس بات کا علم نہیں ہوگا کہ ٹوتھ پیسٹ سے گھر کے چھوٹے مشینیں وغیرہ بھی صاف کیجاتی ہے مثلاًکسی بھی چیز کو میل لگی ہو اس کے ذریعے زبردست صفائی کی جاسکتی ہے ۔ ا س کے علاوہ اگر آپ…

"ٹوتھ پیسٹ کے 3 حیران کن استعمال"

پنجاب نے اپنی ٹیسٹنگ سروس شروع کرنے کا اعلان کر دیا

پنجاب نے اپنی ٹیسٹنگ سروس شروع کرنے کا اعلان کر دیا لاہور(نیوز ڈیسک)پنجاب میں نیشنل ٹیسٹنگ سروس ختم،پنجاب نے اپنی ٹیسٹنگ سروس شروع کرنے کا اعلان کر دیا۔تفصیلات کے مطابق کافی عرصے سے نیشنل ٹیسٹنگ سروس کے طریقہ کار اور معیار کے حوالے شکایات صوبائی حکومت تک پہنچ رہیں تھیں۔نیشنل ٹیسٹنگ سروس سے متعلق شکایات کے باعث پنجاب حکومت نے صوبہ بھر سے نیشنل ٹیسٹنگ سروس کے خاتمے کا اعلان کر دیا ۔پنجاب حکومت نے…

"پنجاب نے اپنی ٹیسٹنگ سروس شروع کرنے کا اعلان کر دیا"

More نواز شریف کے بعد کس کس کے احتساب کی باری آگئی؟ سپریم کورٹ میں بڑے سیاستدان نے بھانڈا پھوڑدیا

More نواز شریف کے بعد کس کس کے احتساب کی باری آگئی؟ سپریم کورٹ میں بڑے سیاستدان نے بھانڈا پھوڑدیا اسلام آباد(نیوز ڈیسک) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ پاناما اللہ کی طرف سے بے آواز لاٹھی ہے ،افسوس ہے کہ حکمران طبقے نے کبھی بھی عدالتی فیصلے کو قبول نہیں ،حکمران ہمیشہ اس فیصلے کو قبول کرتے ہیں جو ان کے مفاد میں ہے ،سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو…

"More نواز شریف کے بعد کس کس کے احتساب کی باری آگئی؟ سپریم کورٹ میں بڑے سیاستدان نے بھانڈا پھوڑدیا"

پاکستان کو امریکہ کے جال میں پھنسانے والا کون تھا؟ آئی ایس آئی کے سابق میجر نے راز کھول دیے

پاکستان کو امریکہ کے جال میں پھنسانے والا کون تھا؟ آئی ایس آئی کے سابق میجر نے راز کھول دیے اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان کو امریکہ کے جال میں پھنسانے والا کون تھا؟ آئی ایس آئی کے سابق میجر نے راز کھول دیے۔ ہم کیوں اتنے سستے بکے؟ یہ سوال ایک نجی ٹی وی پروگرام میں سینئر صحافی و تجزیہ کار کامران خان نے آئی ایس آئی کے سابق میجر (ر) محمد عامر، ماہر…

"پاکستان کو امریکہ کے جال میں پھنسانے والا کون تھا؟ آئی ایس آئی کے سابق میجر نے راز کھول دیے"

پیپلز پارٹی کے رہنماء کے ساتھ مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماء کی شادی ، شاہد خاقان عباسی پہنچ گئے

کراچی(این این آئی)پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما وقاص ملک کی بھتیجی خانیوال سے تعلق رکھنے والے مسلم لیگ (ن)کے رکن قومی اسمبلی محمد خان ڈاھا سے رشتہ ازواج میں منسلک ہوگئیں ۔ شادی کی تقریب مقامی ہوٹل میں منعقد ہوئی۔شادی کی تقریب میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی،اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق ،وزیرمملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب ،وفاقی وزیر طلال چوہدری ،پیپلز پارٹی کے رہنماں نوید قمر ،امتیاز شیخ ،(ن)لیگی رہنماؤں چوہدری جعفر اقبال ،کھیل داس…

"پیپلز پارٹی کے رہنماء کے ساتھ مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنماء کی شادی ، شاہد خاقان عباسی پہنچ گئے"

’نیا پاکستان کے دعویداروں کا اصل چہرہ سامنے آگیا‘‘افسوسناک انکشاف

’نیا پاکستان کے دعویداروں کا اصل چہرہ سامنے آگیا‘‘افسوسناک انکشاف پشاور(آئی این پی ) پشاور کے علاقے تہکال کے بعد فقیرآباد، خیبرکالونی، پشتہ خرہ ا ور ملحقہ علاقوں کے مریضوں میں بھی ڈینگی بخار کی تشخیص،پشاور میں ڈینگی سے متاثرہ مریضوں کی تعداد ایک ہزار سے تجاوز کر گئی،پنجاب حکومت کی رضاکارانہ خدمات کوخیبرپختونخوا نے سیاسی چال قرار د یکر میڈیکل ٹیم کو سرکاری اسپتالو ں تک رسائی نہیں دی۔ تفصیلات کے مطابق پشاور میں…

"’نیا پاکستان کے دعویداروں کا اصل چہرہ سامنے آگیا‘‘افسوسناک انکشاف"

ہر چوتھا پاکستانی ذیابیطس کا شکار ہے

ہر چوتھا پاکستانی ذیابیطس کا شکار ہے ہر چوتھا پاکستانی ذیابیطس کا شکار ہے. پاکستان میں ذیابیطس کے حوالے سے کیے جانے والے قومی سروے 16-2017 کے مطابق پاکستان کی کل آبادی کا 26 فیصد حصہ ذیابیطس کا شکار ہے۔ پاکستانی ذیابیطس.. اِس سروے کے مطابق ملک کی آبادی میں 20 سال کی عمر سے زیادہ کے ساڑھے تین کروڑ سے پونے چار کروڑ افراد اِس مرض کا شکار ہیں۔ قومی ذیابیطس سروے کے یہ نتائج…

"ہر چوتھا پاکستانی ذیابیطس کا شکار ہے"

زیادہ بیویاں، زیادہ بیماریاں

‘زیادہ بیویاں، زیادہ بیماریاں’

زیادہ بیویاں، زیادہ بیماریاں. انسان کا دل چنچل ہوتا ہے۔ کبھی کسی پر آیا اور کبھی کسی دوسرے پر۔ بہت سے معاشروں میں ایک شادی کو تسلیم کیا جاتا ہے۔ لیکن بہتیرے مردوں اور عورتوں کی یہ خواہش رہتی ہے کہ وہ زندگی میں مختلف قسم کے تجربات سے لطف اندوز ہوں۔ یعنی مختلف رشتے بنائیں اور وقت گزاریں۔

بہت سے مذاہب اور دنیا کے بہت سے حصوں میں ایک سے زائد شادی کرنے کا رواج بھی ہے۔ تاہم، کئی مذاہب صرف ایک ہی شریک حیات پر زور دیتے ہیں۔ آج بھی ایک سے زائد شادیاں عام ہیں۔ امریکہ میں بھی دو چھوٹے شہر ہیں، جہاں لوگ کئی شادیوں کی پرانی روایت پر عمل پیرا ہیں۔ ان میں سے ایک یوٹا کک پروو شہر ہے جبکہ دوسرا شارٹ کریک قصبہ ہے۔ اور دونوں ایک دوسرے کے آس پاس آباد ہیں۔

مخصوص جینیاتی بیماریاں

یوٹا کے پروو شہر کے رہائشی ایک عجیب قسم کی بیماری کا شکار ہیں۔ یہاں عیسائیوں کا ایک ایسا فرقہ آباد ہے جو اس مذہب کی اولین ترین روایتوں پر عمل پیرا ہے۔

19ویں صدی میں یہاں کے لوگ پر چرچ آف جیزس کرائسٹ لیٹر ڈے سینٹس یعنی ایل ڈی ایس پر ایمان رکھتے تھے۔ یہ چرچ یہاں کے لوگوں کو کئی شادیوں کا حکم دیتا تھا۔ اس چرچ کے نگران برنگھم ینگ کی 55 بیویوں اور 59 بچے تھے۔ بہر حال بعد میں اس عمل پر پابندی لگا دی گئی۔ لیکن جب تک اس کی اجازت تھی لوگ اپنی خواہش کے حساب سے شادیاں کرتے رہے۔

19ویں صدی میں یہاں کے باشندوں کی ایک ساتھ کی جانے والی کئی شادیوں کا نتیجہ اب اس شہر میں نظر آرہا ہے۔ یہاں کے لوگ ایک خاص قسم کے جینیاتی مرض کا شکار ہوتے جا رہے ہیں۔ یہاں بچے جسمانی اور ذہنی طور پر معذور ہیں۔ عام طور پر یہ بیماری 40 لاکھ افراد میں سے ایک میں ہوتی ہے۔ لیکن پروو شہر میں یہ بیماری 20 ماہ سے تقریبا دو سال کی عمر کے تمام بچوں میں تھی۔ اسے فیومرز ڈیفیشیئنسی کہا جاتا ہے۔

چہرہ عجیب سا

یہ جینیاتی بیماری ہے یعنی ایک نسل سے دوسری نسل میں منتقل ہوتی ہے۔ اس بیماری میں جسم مکمل طور پر تیار نہیں ہو پاتا اور چہرے کی ساخت بھی عجیب ہوتی ہے۔ پیشانی باہر نکلتی آتی ہے۔ آنکھیں پھٹی پھٹی سی ہوتی ہیں۔ کچھ بچے تو بیٹھنے اور چلنے کے قابل بھی نہیں رہ جاتے۔

اس بیماری کی علامات یوٹا کی سرحد سے ملحق شارٹ کریک قصبے میں بھی پائي گئی ہیں۔ درحقیقت، یہ وہ علاقے ہیں جو 20ویں صدی میں ایل ڈی ایس فرقے سے علیحدہ ہو گئے تھے لیکن یہاں بھی لوگ میں متعدد شادیوں کا رواج تھا۔

زیادہ بیویاں، زیادہ بیماریاں

فیومرز کی کمی ایک خاص انزائم کی کمزوری کی وجہ سے ہوتی ہے۔ انزائم کسی بھی جاندار کے لیے انتہائی ضروری ہوتے ہیں اور یہ جسم میں توانائی کی سطح کو برقرار رکھتے ہیں۔

فیومرز کی کمی کے سبب جب انزائم کو توانائی نہیں ملتی تو دماغ کو بھی توانائی نہیں مل پاتی۔ نتیجہ یہ ہوتا ہے کہ دماغ کام کرنا بند کر دیتا ہے اور جسم کی نشو و نما رک جاتی ہے۔ بعض لوگوں کی حالت اتنی خراب ہو جاتی ہے کہ انھیں عمر بھر کھانے کی نلیوں کی مدد سے رہنا پڑتا ہے۔ وہ جسم پر بیٹھی مکھی بھی نہیں اڑا سکتے۔

فیومرز کی کمی صرف اس صورت میں ہوتی ہے جب بچہ اپنی والدہ اور والد دونوں سے ایک ایک خراب جین حاصل کر لے۔ شارٹ کریک میں یہ بیماری کیوں پھیلی یہ جاننے کے لیے ہمیں تاریخ کے صفحات پلٹنا پڑیں گے۔

دراصل ‘زیادہ بیویاں، زیادہ بیماریاں’ کی وجہ سے پروو شہر اور شارٹ کریک میں ایک ہی خاندان کے بہت سے لوگ ہو گئے۔ نتیجے کے طور پر اکثر ایک ہی خاندان کے دو لوگوں میں شادیاں ہو جاتی ہیں جن میں اس بیماری کے جین ہیں۔ اس کی وجہ سے، یہاں بہت سے بچے فیومرز کی کمی کے ساتھ پیدا ہوتے ہیں۔

اب جو بچے یہاں ہیں وہ کسی نہ کسی طرح ایک دوسرے خاندان سے منسلک ہوتے ہیں۔ مثال کے طور پر شارٹ کریک دو خاندانی نام جیسوپ اور بارلو زیادہ ہیں۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ آج کی آبادی کا ایک بڑا حصہ جیمز یا بارلو سے آتا ہے۔

زیادہ-بیویاں،-زیادہ-بیماریاں

مؤرخ بنجامن بیسٹلائن کا کہنا ہے کہ شارٹ کریک میں 75 سے 80 فیصد آبادی ایک دوسرے کے ساتھ خون کا رشتہ رکھتے ہیں۔ پوری آبادی میں ہر دوسرے شخص کی جین میں کوئی نہ کوئی خرابی ہے۔ بہت سے بچے سن بلوغ تک پہنچنے سے پہلے مر جاتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق، ایک صحت مند آبادی کے لیے یہ ضروری ہے کہ شادی مختلف برادریوں کے درمیان ہو تاکہ مختلف جین کے لوگوں سے مختلف قسم کی نئی نسل پیدا ہو۔ لیکن کئی بیویاں رکھنے کی وجہ سے شارٹ کریک کے لوگوں کا جین پول چھوٹا ہو گیا ہے۔ اس کی وجہ سے، شہر کے لوگ فیومرز کی کمی کا شکار ہو رہے ہیں۔

افریقہ میں بھی ‘زیادہ بیویاں، زیادہ بیماریاں’ کا رواج عام ہے۔ کینیا کی پارلیمنٹ نے سنہ 2014 میں ایک بل منظور کیا تھا اور اس کے لیے ایک قانون نافذ کیا ہے۔ مغربی افریقی ممالک میں تو کئی شادیوں کا رواج ہزاروں سالوں سے برقرار ہے اور یہاں کے لوگوں میں بھی جین کی خرابی پائی گئی ہے۔ قصہ مختصر یہ کہ بہتر یہی ہے کہ جہاں تک ممکن ہو، ایک ہی خاتون کے ساتھ نباہ کر لیں ورنہ آپ کی آنے والی نسل کسی سنگین بیماری کا شکار ہو سکتی ہے۔