کتوں کے مالکو، غور سے سنواگر آپ کا کتا اچھا نہیں ہے تو ٹھیک ہے، اسے کھا جائیں“، چین میں ریس ہارنے پر مالک کتوں کو کھا جاتے ہیں یا شیر چیتوں

چین کے صوبے ہیبئی کی شیانگ کاؤنٹی میں لوگ گرے ہاؤنڈز کتے خریدنے پر بھاری رقمیں خرچ کرتے ہیں۔ اس کے بعد ان پر شرطیں لگائی جاتی ہیں۔ اگر کتا شرط جیت جائے تو مالک کے وارے نیارے ہو جاتے ہیں اور اگر ہار جائے تو مالک سڑک پر بھی آجاتے ہیں، جس کاغصہ غریب کتوں پر نکالا جاتا ہے۔ کتوں کی ریس اکثر کتوں کے مرنے یا شدید زخمی ہونے تک جاری رہتی ہے۔ہارنے والے یا زخمی کتوں کو مذبح خانے بھیج دیا جاتا ہے۔چینی سوشل میڈیا پر ایک انتہائی پریشان کن ویڈیو وائرل ہوئی ہے جس میں ایک آدمی گرے ہاؤنڈ کو اپنے سر کے اوپر گھما کر زمین پر پٹخ رہا ہے۔

کتے کے بے جان ہوجانے کے بعد کتے کا مالک کہتا ہے کہ ”کتوں کے مالکو، غور سے سنو۔ گر آپ کا کتا اچھا نہیں ہے تو ٹھیک ہے، اسے کھا جائیں“ اس کے بعد مالک بتاتا ہے کہ یہ کتا ریس میں ہار گیا تھا، اس لیے اب میں اس کا گوشت کھانے والا ہوں۔اس ویڈیو کو 5 ملین سے زائد صارفین دیکھ چکے ہیں اور مذکورہ شخص کے اس ظالمانہ اقدام کی مذمت کر رہے ہیں۔ ایک شخص نے Weiboپر کتے کے مالک کے حوالے سے کہا ” یہ مخلوق انسان نہیں ہو سکتا۔” ایک دوسرے شخص نے تبصرہ کیا کہ "میں امید کرتا ہوں کہ اس شخص کو اسی طریقے سے قتل کیا جائے گا جیسے اس نے اپنے کتے کو مارا ہے۔”چین میں جانوروں پر تشدد کے خلاف کسی قسم کے قوانین نہیں ہیں، اس لیے اگر اس شخص کو شناخت کر بھی لیا جائے تو سزا ملنے کے آثار نظر نہیں آتے۔جانوروں کےحقوق کے لیے کام کرنے والی ایک تنظیم ،اینیمل ایشیا ، نے کچھ عرصہ پہلے ایک چینی وائلد لائف پارک میں اس طرح کی ریس سے پردہ اٹھایا تھا۔ تنظیم کا کہنا ہے کہ ان کتوں کو ریس شروع ہونے سے پہلے تنگ پنجروں میں رکھا جاتا ہے اور ان کا کھانا پینا کم کر دیا جاتا ہے۔ ریس میں زخمی ہونے والے کتوں کو پارک کے شیر اور چیتوں کی خوراک بنا دیا جاتا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے