چوہدری نثار اور عمران خان کی ون آن ون ملاقات

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان مسلم لیگ(ن) کے پلیٹ فارم سے ٹکٹ نہ ملنے پر آئندہ چند روز میں پاکستان تحریک انصاف میں باقاعدہ شمولیت کا اعلان کریں گے۔پارٹی میں شمولیت سے قبل پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان سے ون آن ون ملاقات بھی

متوقع ہے۔انتہائی معتبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ چوہدری نثار علی خان نے پاکستان مسلم لیگ(ن) کی جانب سے ٹکٹ نہ ملنے پر پی ٹی آئی میں شمولیت کا حتمی فیصلہ کرلیا ہے،اس سلسلہ میں انہوں نے اپنے قریبی اور خاندانی رفقاء سے بھی مشورہ کرلیا ہے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے بھی ایک مرتبہ پھر انہیں پارٹی میں شمولیت کی دعوت دیدی ہے اور عمران خان نے مشاورت بھی کرلی ہے کہ ٹیکسلا سے سرور خان کے مقابلہ میں چوہدری نثار علی خان کو ڈراپ کردیا جائے گا جبکہ راولپنڈی میں انکے مد مقابل پی ٹی آئی کے امیدوار کو ڈراپ کرایا جائے گا۔ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ چوہدری نثار علی خان وفاق کی نسبت صوبائی سیاست میں زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں اور انکی دلی خواہش ہے کہ وہ وزیراعلیٰ پنجاب منتخب ہوں مگر اس حوالے سے پی ٹی آئی وزیراعلیٰ پنجاب کے لئے اپنے سینئر رہنما شاہ محمود قریشی کو نامزد کرچکی ہے۔ذرائع کے مطابق چوہدری نثار علی خان کو قریبی حلقہ نے مشورہ دیا ہے کہ وہ صوبائی سیٹوں سے بھی دستبردار ہوجائیں تاکہ پی ٹی آئی کو تقویت مل سکے،اس پر بھی چوہدری نثار علی خان نے مزید

مشاورت شروع کردی ہے اور حتمی لائحہ عمل عمران خان سے ملاقات کے دوران تیار کیا جائے گا۔دوسری جانب سابق وزیر خارجہ اور ن لیگ کے رہنما خواجہ آصف نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان پر نام لیے بغیر تنقید کی ہے۔سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں خواجہ آصف نے کہا کہ ’کم از کم عمرہ تو اپنے پلے سے کر لو،مفت بری کی بھی انتہا ہے‘۔خواجہ آصف نے پنجابی میں مزید لکھا کہ ’خرچے واسطے بندہ وی نال، ای سی ایل سے فارغ کروا کے، اینی وڈی چول وی شاید ہی کوئی اور ہو‘۔خیال رہے کہ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اپنی اہلیہ اور قریبی دوست زلفی بخاری کے ہمراہ گزشتہ دنوں عمرے کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب روانہ ہوئے تھے۔زلفی بخاری کو عمران خان اور ان کی اہلیہ کے ہمراہ چارٹرڈ طیارے کے ذریعے عمرے کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب روانا ہونا تھا اور ایف آئی اے حکام نے انہیں نام بلیک لسٹ میں ہونے کے باعث روک دیا تھا۔زلفی بخاری نے اپنا نام نکلوانے کے لیے کافی تگ و دو کی اور وزارت داخلہ کے حکام سے اجازت ملنے پر وہ عمران خان کے ساتھ سعودی عرب روانہ ہوگئے۔ذرئع کا کہنا تھا کہ وزارت داخلہ نے زلفی بخاری کو 6 دن کے لیے عمرے پر جانے کی اجازت دی تھی۔چیئرمین تحریک انصاف عمران خان اور ان کی اہلیہ سعودی عرب سے آج رات وطن واپس پہنچ جائیں گے۔(ذ،ک)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے