چوہدری سرورپر برطانیہ میں مقیم خاتون اور اسکی بیٹیوں کے شرمناک الزامات

اہور (ویب ڈیسک) سابق گورنر پنجاب چوہدری سرور پر قبضہ مافیا کا الزام لگانے والی ان کے سابق پارٹنر کی اہلیہ میری احمد کے بیان کے بعد میری احمد کے سوتیلے بیٹے شکیل احمد نے بھی اپنی وڈیو میں اپنی ماں کو مورد الزام ٹھرایا تھا، اب ایک پاکستانی ویب سائٹ کو ایک بار پھر میری احمد کی وڈیو موصول ہوئی

ل ہے جس میں وہ اپنی بیٹیوں کے ساتھ موجود ہیں اور چوہدری سرور اور سوتیلے بیٹے شکیل احمد کو غلط ثابت کر رہی ہیں۔چوہدری سرور کے سابق بزنس پارٹنر کی اہلیہ میری احمد نے تازہ وڈیو میں کہا ہے کہ "میں نے ایک بیان لکھا ہے اسکے بعد بیٹی ماں کی طرف سے یہ بیان پڑھتی ہے میرے بیٹے شکیل احمد کی ویڈیو جس میں وہ سابقہ گورنر پنجاب محمد سرور کو سپورٹ کر رہا ہے اس کا جواب دے رہی ہوں۔ اس ویڈیو میں میرے بیٹے نے کہا ہے کہ محمد سرور کا بشیر احمد کی پیرمحل کی زمین سے کوئی لینا دینا نہیں، میرے بیٹے کو اس ویڈیو کے لئے پیسے دئیے گئے ہیں۔ یہاں تک کہ اس نے یہ جھوٹ بھی کہا کہ یہ ایک فیملی مسئلہ ہے جس میں محمد سرور شامل نہیں ہے۔ گلاسکو میں ہماری محمد سرور سے بات چیت ہوئی ہے اور اس نے کہا ہے کہ میرے خاوند کے ساتھ پیر محل کی زمین کی مشترکہ ملکیت اور اگر ہم اسے سائن کر دیں تو جو پیسے اسے ملیں گے ۔ میرا ایک بیٹا اور پانچ بیٹیاں ہیں۔ بیٹیاں میرے ساتھ مددگار ہیں، میرے بیٹے کو پیسوں سے غرض ہے وہ ہمارے ساتھ مخلص نہیں ہے۔ اس نے دنیا کے سامنے میری بے عزتی کی اور مجھے شرمندہ کیا۔ میں اس کے رویے سے شرمندہ ہوں ، اس نے جیل بھی کاٹی ہے، وہ شراب پی کے گاڑی چلاتا پکڑا بھی گیا ہے۔محمد سرور نے شکیل کو اپنے فائدے کے لئے استعمال کیا۔ میرا بیٹا مسلمان ہے جس طرح اس نے بات کی ہے کوئی بھی بیٹا اپنی ماں کے بارے ایسے بات نہیں کرتا اور قرآن کہتا ہے کہ جنت ماں کے قدموں تلے ہے۔ میرا خاوند 30 سال تک محمد سرور کے ساتھ رہا ہے۔ میرے خاوند نے مرنے سے ایک سال قبل تک محمد سرور سے بات نہیں کی تھی۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ محمد سرور نے ہمیں ہمارے خاندانی کاروبار میں دھوکہ دیا تھا۔ جتنے میں بکا ہمیں آدھے سے بھی کم دیا۔ میرا خاوند ایک دیانتدار ، شریف انسان تھا جو گلاسکو میں اچھے لفظوں میں پہچانا جاتا تھا، اور پاکستان میں یو کیئر فائونڈیشن کا ڈائیریکٹر تھا۔ محمد سرور میرے بیٹے سے گلاسکو کیش اینڈ کیری میں ملا اور اسے پیسے دئیے تاکہ وہ اپنا حصہ محمد سرور کو منصوب کر دے۔ میرے بیٹے نے میری بیٹیوں سے رابطہ کیا کیونکہ وہ ان کی بھی اجازت چاہتا تھا۔ محمد سرور میری بیٹیوں سے ملا اور اس نے بتایا کہ میرے خاوند کے ساتھ 50 فیصد کا حصے دار تھا۔ اس نے بتایا کہ وہ میرے بیٹے بشیر کو قیمت ادا کر چکا ہے، میرے بیٹے کو 40،000 پائونڈ دیے گئے۔ محمد سرور نے2014 سے اب تک وہ پیسے نہ دینے کا یہ بہانہ بنا رہا تھا کہ جائیداد کے کوئی کاغذات نہیں ہیں اور پاکستان میں اس کی کوئی رجسٹری بھی نہیں ہے ۔ محمد سرور نے بتایا کہ پاکستان میں دھاندلی چلتی ہے اور پیسے دے کر کچھ بھی کام کروایا جا سکتا ہے۔ بشیر کے مرنے کے بعد اس نے کہا کہ وہ پیر محل کے سلسلے میں اس کی مدد کرے گا۔ اس نے مجھے اپنے وکیل کو پاور آف اٹارنی دینے کو کہا اوروکیل ساجد حیدر کو پاور آف اٹارنی دینے کو کہا تاکہ وہ پاکستان میں جائیداد کو دیکھے گا۔میں نے دو سال قبل یہ کر دیا تھا۔ میں نے سوچا کہ ایسا کرنے سے وہ جائیداد کو مجھ سے چھینے گا نہیں اور بیچنے میں میری مدد کرے گا۔ یہ پاور آف اٹارنی ہے۔ اس نے کہا کہ وہ مجھ سے خریدے گا اور 12 فیصد مجھے دے گا اس نے مجھے کوئی کاغذات نہیں دکھائے اور مجھے کہا کہ میں اس پر اعتبار کروں۔ ایسا کرنے کے بعد میں اور میرے بیٹیاں جائیداد کے بارے میں شک میں مبتلا ہو گئے اور ہم نے زمین کا کوئی کاغذ اسے نہیں بیچااس نے کہا کہ پیر محل 6 کنال پر محیط ہے اور اس کی قیمت 80،000 پائونڈ ہے۔ اصل میں وہ اس سے پانچ گناہ زیادہ قیمت کی مالیت ہے۔ اس نے کہا کہ اس کا جائیداد پر قبضے سے کوئی تعلق نہیں ہے اور یہ ایک خاندانی جھگڑا ہے۔ یہ جھوٹ ہے اگر ایسا تھا تو اس نے مجھے گلاسکو میں ملنے کو کیوں کہا اور اسے پاور آف اٹارنی دینے کو کیوں کہا؟ اور اس نے میرے بیٹے کو اس کا حصہ کیوں دیا۔ اور اس کی ویڈٰیو بھی ہے۔ ہم صرف یہ چاہتے ہیں کہ محمد سرور پر قانونی کاروائی کی جائے۔ محمد سرور کا بھائی رمضان بھی گلاسکو کا ایک معتبر شہری ہے اس نے بھی کہا ہے کہ جائیداد کا تنازعہ فوری حل ہونا چاہیئے۔ میں گورنمنٹ پنجاب اور عمران خان سے اپیل کرتی ہوں کہ وہ مجھے انصاف دلائیں کیونکہ وہ حق اور سچ کا ساتھ دیتے ہیں اور دھاندلی کے خلاف ہیں۔ محمد سرور کے بیانات ان کے عمل سے برعکس ہیں۔ میں امید کرتی ہوں کہ یہ ویڈیو اتھارٹیز کی توجہ حاصل کرے گی۔

You May Also Like

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے