پرویز مشرف نے بالآخر بڑےراز سے پردہ چاک کردیا

پرویز مشرف نے بالآخر بڑےراز سے پردہ چاک کردیا

سلام آباد (نیوز ڈیسک )سابق صدر جنرل پرویز مشرف نے ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو اور ان کے بھائی مرتضیٰ بھٹو کو پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیرمین آصف زرداری نے قتل کرایا۔سابق وزیر اعظم بےنظیر بھٹو کو 27 دسمبر 2007ء کو عام انتخابات کی مہم کے سلسلے میں راولپنڈی کے لیاقت باغ میں ایک جلسے کے

اختتام پر گاڑی میں چھت سے باہر نکلتے ہوئے فائرنگ اور بم دھاکہ کے نتیجے میں شہید ہو گئی تھیں۔دو دن کے اندر اندر بلٹ پروف گاڑی کی چھت کٹوانے کا حکم جاری کیا گیا اور یہ کام کس نے سر انجام دیا۔پرویز مشرف نے کہا کہ دیکھنا چاہیے کہ بے نظیر کے قتل کا فائدہ کس کو ہوا؟ کس نےبےنظیر کو ٹیلی فون کرکےگاڑی سے باہر نکلنے پر اکسایا؟تمام صورتحال کے پیش نظر قوم کو حقائق پر فوکس کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ بے نظیر کے قتل کا فائدہ ایک ہی آدمی آصف زرداری کو ہوا، بیت اللہ محسود کو سازش کرکے استعمال کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ خالد شہنشاہ کو بینظیر بھٹو کا سیکورٹی انچارج آصف زرداری نے بنایا۔ وہ قتل کے وقت بینظیر بھٹو کی گاڑی میں دوسرے لوگوں کے ساتھ موجود تھا اس کے بعد کچھ دن کے اندر اندر تمام ثبوتوں کو مٹانے کیلئےان تمام افراد کو مروا دیا گیا جو براہ راست بے نظیر بھٹو کے قتل میں ملوث تھے ۔کراچی میں خالد شہنشاہ کو بھی مشتبہ حالات میں مروادیا گیا۔پرویز مشرف نے قتل کی سازش میں سابق افغان صدر کرزئی اور بیت اللہ محسود کو شامل قراردیا۔پرویز مشرف نے بے نظیر کے بچوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ وہ بلاول، آصفہ اور بختاور کو بتانا چاہتے ہیں کہ بے نظیر کا اصل قاتل کون ہے۔

You May Also Like

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے