میں نے کوئی جرم نہیں کیا ،اپنی بے گناہی عدالت میں ثابت کروں

میں نے کوئی جرم نہیں کیا ،اپنی بے گناہی عدالت میں ثابت کروں

اسلام آباد (ویب ڈیسک )وفاقی وزیرخزانہ اسحاق ڈارپرنیب کی جانب سے دائر ناجائزاثاثہ جات کیس ریفرنس میں احتساب عدالت نے فرد جرم عائد کردی۔۔اس موقع پرعدالت کے باہر سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں اور احاطہ عدالت کو مکمل طور پرسیل کردیاگیا ہے جبکہ میڈیا کے نمائندوں کو بھی اندر جانےنہیں دیا

جارہا۔ملزم اسحاق ڈار پر احتساب عدالت میں آج فرد جرم عائد کی جانے کے بعد ٹرائل کا باقاعدہ آغاز ہوجائے گا۔خیال رہے کہ دو روز قبل احتساب عدالت نے سماعت پرملزم اسحاق ڈار کو 23 والیم پرمشتمل ریفرنس کی نقول فراہم کی گئی تھی۔بعدازاں عدالت نے اسحاق ڈار کے وکیل کی جانب سے ریفرنس کے جائزے کے لیے 7 دن دینے کی درخواست کی تھی جسے عدالت نے مسترد کرتے ہوئے ملزم پرفرد جرم عائد کرنے کے لیے 27 ستمبر کی تاریخ دی تھی۔احتساب عدالت کی جانب سے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار پر اثاثہ جات کیس میں فرد جرم عائد ہونے پر انہوں نے صحت جرم سے انکار کردیا ۔ احتساب عدالت میں اثاثہ جات کیس کی سماعت جاری ہے اس دوران عدالت نے اثاثہ جات کیس میں فرد جرم کے نقات پڑھ کر سنائے ،فرد جرم عائد ہونے کے بعد وفاقی وزیر خزانہ نے الزامات کی صحت سے انکار کردیا ۔ان کا کہنا تھا کہ میں نے کوئی جرم نہیں کیا ،اپنی بے گناہی عدالت میں ثابت کروں گا۔انہوں نے آمدن سے زائد اثاثے بنانے کا الزام غلط قرار دیتے ہوئے کہا کہ میرے اثاثے آمدن سے مطابقت رکھتے ہیں ۔اسحاق ڈار نے مزید کہا کہ وہ احتساب عدالت میں الزامات کا دفاع کریں گے ۔

You May Also Like

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے