عام انتخابات وقت پر ہوں گے یا نہیں؟

اسلام آباد ( ویب ڈیسک) صدر ممنون حسین نے کہا کہ تمام سیاسی قیادت پختہ اور وفاقی سوچ رکھتی ہے، سب کو معلوم ہی کہ ملک کا مفاد کس بات میں ہے اور نقصان کس بات میں ہے، میں چاہوں بھی تو تمام لیڈشپ کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا نہیں کر سکتا،

تمام ادارے اپنی حدود میں رہ کر کام کریں تو کویہ مسئلہ پیدا نہیں ہوگا، انتخابات وقت پر ہوتے دیکھ رہا ہیں،بیرون ملک مکان پر مخصوص آدمی کو ٹارگٹ بنانا مناسب نہیں۔ پاسپورٹ آفس کے دورہ کے موقع پر میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے صدر ممنون حسین کا کہنا تھا کہ ضروری نہیں کہ بیرونی ممالک میں پڑی ہوئی تمام دولت لوٹی ہوئی رقم ہو اور رقم باہر لے جانا کوئی جرم نہیں، دیکھنا یہ کہ رقم کس طریقہ سے باہر گئی، کہیں اس مقصد کیلئے غیر قانونی طریقہ تو استعمال نہیں کیا گیا، سب کے لئے یہ کہنا غلط ہے کہ لوٹی ہوئی دولت ملک سے باہر ہے۔سینکڑوں ہزاروں لوگوں کے مکان ملک سے باہر ہیں،پتہ نہیں کیا کیا لوگ کر رہے ہیں لیکن کسی مخصوص آدمی کو ٹارکٹ بنانا اور اس کے بارے میں کچھ کہنا مناسب بات نہیں ہے ایک سوال کے جواب میں صدر نے کہا کہ سپریم کورٹ نے کئی لوگوں کو توہین عدالت پر سزائیں دیں اور جنکو مناسب نہیں سمجھا انہیں نہیں دیں،یہ ایسی چیزیں ہیں جو وقتی طور پر پیدا ہوئیں، لیکن زیادہ چلنے والی نہیں ہیں، وقت کے ساتھ ساتھ ختم ہو جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکس ایمنسٹی سکیم اچھی ہے،انڈو نیشیا میں کامیاب ہو رہی ہے،یہ سکیم بین الاقوامی قوانین کت عین مطابق ہے، دنیا بھر میں باہر سع رقم لانے والوں کی ان کا ملک رعایت دیتا ہے۔(ف،م)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے