دبئی ٹیسٹ: محمد عامر پنڈلی کی تکلیف میں مبتلا

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے فاسٹ بولر محمد عامر کو سری لنکا کے خلاف دبئی میں جاری دوسرے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن پنڈلی کی تکلیف کی وجہ سے بولنگ ادھوری چھوڑ کر میدان سے باہر جانا پڑا۔

محمد عامر کو بائیں پنڈلی میں یہ تکلیف دبئی ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں بولنگ کے دوران ہوئی اور وہ اپنا 17 واں اوور نامکمل چھوڑ کر ڈریسنگ روم میں چلے گئے جس کے بعد یاسر شاہ نے ان کا اوور مکمل کرایا۔

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے بولنگ کوچ اظہرمحمود نے پہلے دن کے کھیل کے اختتام پر بی بی سی کو بتایا کہ محمد عامر کی یہ انجری فی الحال زیادہ سنگین نوعیت کی معلوم نہیں ہوتی تاہم میڈیکل سٹاف ان پر نظر رکھے ہوئے ہے۔

محمد عامر نے سری لنکا کی پہلی اننگز میں ایک وکٹ حاصل کی ہے جو اس سیریز میں ابھی تک ان کی پہلی کامیابی بھی ہے۔ وہ ابوظہبی ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں کوئی وکٹ حاصل نہیں کرسکے تھے۔

حالیہ دنوں میں محمد عامر کی بین الاقوامی کرکٹ میں کارکردگی ملی جلی رہی ہے۔

وہ چیمپیئنز ٹرافی کے فائنل میں شاندار بولنگ کرتے ہوئے تین وکٹیں حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے تھے تاہم ٹیسٹ میچوں میں ان کی کارکردگی اتنی اچھی نہیں رہی ہے۔

اس سال ویسٹ انڈیز کے دورے کے دوران کنگسٹن میں کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں چھ وکٹیں حاصل کرنے کے بعد سے وہ اب تک آٹھ ٹیسٹ اننگز میں صرف آٹھ وکٹیں ہی حاصل کر پائے ہیں۔

پاکستانی ٹیم کے بولنگ کوچ اظہر محمود کا محمد عامر کی اس کارکردگی کے بارے میں کہنا ہے کہ اس کی وجہ محمد عامر کا بیک وقت تینوں فارمیٹ کی کرکٹ کھیلنا ہے۔

ان کے مطابق جو بولرز صرف ٹیسٹ کرکٹ کھیلتے ہیں وہ فل لینتھ پر بولنگ کرتے ہیں جبکہ محدود اوورز کی کرکٹ کھیلنے والے بولرز شارٹ آف لینتھ بولنگ کرتے ہیں۔

اظہر محمود نے کہا کہ اگر محمد عامر فل لینتھ پر بولنگ کرتے ہیں تو وہ زیادہ خطرناک ثابت ہوتے ہیں۔ انھوں نے نئی گیند کے ساتھ بہت اچھی بولنگ کی لیکن بدقسمتی سے انھیں صرف ایک وکٹ مل سکی۔

You May Also Like

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے