جیل سے رہائی کے چند روز بعد ہی نہال ھاشمی ایک بڑی مصیبت میں پھنس گئے

جیل سے رہائی کے چند روز بعد ہی نہال ھاشمی ایک بڑی مصیبت میں پھنس گئے. جانتے ہیں اس لیگی رہنما نے کیا جرم کیا؟ تفصیل پڑھ کر آپکو انکی قسمت پر افسوس ہوگا.

مسلم لیگ ن کے توہین عدالت میں سزا یافتہ رہنما نہال ہاشمی کو انٹرا کورٹ اپیل الٹی پڑ گئی ۔ سپریم کورٹ نے ججوں کو گالیاں دینے پر سابق سینیٹر کو نوٹس جاری کر کے کل طلب کرلیا۔ نہال ہاشمی کی ججوں کو گالیاں دینے کی ویڈیو کمرہ عدالت میں چلائی گئی۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے نہال ہاشمی کے وکیل کامران مرتضیٰ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا سن لیں آپ کے مؤکل کیا کہہ رہے ہیں ، نہال ہاشمی نے رہا ہونے کے بعد گالیاں دیں ، کیوں نہ انکی سزا بڑھا دیں ، ان پر مقدمہ درج کرنے کا حکم دیں اور توہین عدالت کا مزید ایک نوٹس جاری کریں۔

وکیل کامران مرتضیٰ نے استدعا کی کہ نہال ہاشمی کی گالیوں کے الفاظ عدالتی حکم نامے میں نہ لکھے جائیں ۔ اس پر چیف جسٹس نے کہا نہال ہاشمی کی گالیاں سارے پاکستان نے سنیں ، ہم نے اپنے راستے کا انتخاب کر لیا ہے ، یہ الفاظ عدالتی حکم نامے میں لکھوانے میں کوئی شرم نہیں۔
جیل سے رہائی کے چند روز بعد ہی نہال ھاشمی ایک بڑی مصیبت میں پھنس گئے. جانتے ہیں اس لیگی رہنما نے کیا جرم کیا؟ تفصیل پڑھ کر آپکو انکی قسمت پر افسوس ہوگا.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے