تمام قیاس آرئیاں ختم : تحریک انصاف کے مرکزی عہدے پر کس رہنماکو تعینات کردیا گیا ، نوٹیفیکشن جاری

تمام قیاس آرئیاں ختم : تحریک انصاف کے مرکزی عہدے پر کس رہنماکو تعینات کردیا گیا ، نوٹیفیکشن جاری

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) رکن قومی اسمبلی غلام سرور خان کو پاکستان تحریک انصا ف کا مرکزی سینئر نائب صدر مقرر کردیا گیا ہے ،انکی تقرری کا باضابطہ نوٹیفکیشن جاری کردیا گیاہے ۔ پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی میڈیا ڈیپارٹمنٹ سے جاری بیان کے مطابق غلام سرور کی بطور مرکزی سینئر

صدر تقرری کا نوٹیفکیشن چیئرمین عمران خان نے جاری کیا ہے۔عمران خان نے غلام سرور خان کیلئے نیک تمناؤں اور خواہشات کا اظہار کیا ہے ۔ جبکہ دوسری جانب پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین کی سپریم کورٹ سے نا اہلی اور پارٹی کے جنرل سیکرٹری کے عہدے سے استعفے کے بعد پی ٹی آئی نے پارٹی کے جنرل سیکرٹری کے عہدے کے لیے جوڑ توڑ تیز کر دیا ہے. تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے سیکرٹری جنرل کے عہدے کے لیے مشاورت کا عمل جاری ہے . ذرائع نے بتایا کہ جنرل سیکرٹری کا عہدہ خیبر پختونخواہ کو دینے پر غورکیا جا رہا ہے. خیبر پختونخواہ کے صوبائی وزیر عاطف خان کو مرکزی سیکرٹری جنرل بنائے جانے کا امکان ہے. البتہ اس معاملے پر حتمی فیصلہ پی ٹی آئی چئیرمین عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے کور کمیٹی کے اجلاس میں کیا جائے گا. یاد رہے کہ سپریم کورٹ نے جہانگیر ترین کو آئین کے آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت نا اہل قرار دیا تھا جس کے بعد جہانگیر ترین نے پارٹی کے جنرل سیکرٹری کے عہدے سے خود ہی استعفٰی دے دیا۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کو نااہل قراردینے کی ن لیگ کے حنیف عباسی کی پٹیشن مسترد کر دی

جبکہ پی ٹی آئی کے جہانگیر ترن کو تاحیات نااہل قرار دے دیا ہے۔ عدالت نے فیصلے میں کہا کہ جہانگیر ترین کو ایماندار قرار نہیں دیا جا سکتا۔ انہیں 62 ون ایف کے تحت نااہل قرار دیا گیا ہے۔ عدالت نے کہا کہ جہانگیر ترین درست جواب نہیں دے رہے تھے، انہوں نے اپنے بیان میں مشکوک ٹرمز استعمال کیں، اس لیے جہانگیر ترین کو نااہل قرار دیا گیا ہے۔ عدالتی فیصلے میں کہا گیا کہ عمران خان نیازی سروسز کے شیئر ہولڈر یا ڈائریکٹر نہیں تھے، عمران خان نے فلیٹ ایمنسٹی اسکیم میں ظاہر کردیا تھا۔ عدالت نے کہا کہ عمران خان نے جمائما کے دیے گئے پیسے ظاہر بھی کیے۔ اس قبل چیف جسٹس ثاقب نثار نےکہا کہ فیصلے میں ہونے والی تاخیر پر معذرت چاہتا ہوں، ایک صفحے پر غلطی تھی 250 صفحے پڑھنے پڑے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ غیر ملکی فنڈنگ کے معاملے کا تعین الیکشن کمیشن کرے۔ سپریم کورٹ نے فیصلے میں کہا کہ الیکشن کمیشن غیر جانبدارانہ طور پر تحریک انصاف کے اکاؤنٹس کی گزشتہ 5 سال تک کی چھان بین کرسکتا ہے۔ اس قبل چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ فیصلے میں ہونے والی تاخیر پر معذرت چاہتا ہوں، ایک صفحے پر غلطی تھی 250 صفحے پڑھنے پڑے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے