سیلفی کی شوقین دونوجوان لڑکیوں کے ساتھ افسوسناک واقعہ پیش آگیا، ہر آنکھ اشکبار

نہر کنارے سیلفی کا شوق دوشیزہ کی جان لے گیا جبکہ اس کی کزن معجزانہ طور پر بچ گئی، جاں بحق ہونے و الی لڑکی میاں چنوں سے گوجرانوالہ شادی کی تقریب میں آئی تھی، ہلاکت کی خبر سننے کے بعد شادی والے گھر میں صف ماتم بچھ گئی ۔16سالہ مبشرہ دختر طارق اپنی کزن نوشین کے ساتھ نہر کنارے پر سیلفی بنا رہی تھی کہ اسی دوران پاؤں پھسلنے سے دونوں لڑکیاں نہر میں جا گریں ، نہر میں گرنے کے بعد نوشین نے نہر میں لگی جھاڑیوں کو پکڑ لیا اور اس کو علاقہ مکینوں نے باہر نکال لیا، دوسری طرف اطلاع ملنے پر ریسکیو کی ٹیمیں بھی موقع پر پہنچ گئیں دو گھنٹے بعد مبشرہ کی لاش نکال لی گئی ، عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ مبشرہ اور اس کی کزن نہر کنارے سیلفی بنا رہی تھیں کہ اچانک پاؤں پھسلنے سے نہر میں گر گئیں ۔گھر والوں کے مطابق دونوں لڑکیاں سیر کے لیے نہر پر گئی تھیں ۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق کالام سے واپسی پر مہمانوں کی گاڑی دریائے سوات میں جاگری۔ دو افراد کی لاشیں برآمد، 6 لاپتہ اور دو کو زخمی حالت میں نکال لیا گیا۔ ضلع بونیر کے علاقہ لیلگانئی سے دس افراد ایک پک اَپ میں سیر و سیاحت کے لئے کالام گئے تھے۔ واپسی پر پک اَپ سڑک کی انتہائی خراب حالت کی وجہ سے ڈرائیور سے بے قابو ہوکر دریائے سوات میں جاگری۔ ریسکیو اہلکاروں کے مطابق دو افراد فضل الرحمان اور شیر خان کی لاشیں دریا سے نکال دی گئیں۔ دو افراد اقبال حسین اور امیر نواب کو زخمی حالت میں نکال لیا گیا۔ چھے افراد محمد علی، زر تاج، خان محمد، سید نواب، دواخان اور بخت روان تاحال دریا میں لاپتا ہیں جن کی تلاش جاری ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے