بغیر منہ والا ہرن نما جانور نے سب کی چیخیں نکال دیں

ایک ہرن نے ساری دنیا کو حیران کر دیا. اس ہرن میں ایسی خاص بات کیا تھی کہ جس نے بھی دیکھا چونک گیا؟ آئیں اس عجیب و غریب ہرن کی تفصیلات اس پوسٹ میں پڑھیں.

امریکہ کے صوبے نیو جرسی کے شہر کولتس نک کا ایک رہائشی جب اپنے گھر کی کھڑکی سے باہر جنگل میں جھانک رہا تھا تو اسے ایک ایسا ہرن نظر آیا جو دکھنے میں عام ہرن سے مختلف تھا. پہلے تو یہ آدمی یہی سوچتا رہا کہ کیا یہ واقعے میں کوئی ہرن ہے یا کوئی اور شے؟ جسامت سے تو بلکل ہرن ہی لگ رہا تھا لیکن ہرن کا منہ گول لکڑ کی طرح تھا اور اس میں ایک چھوٹا سا سوراخ بھی تھا جسکی مدد سے ہرن کو دکھائی دے رہا تھا.

اس ہرن کو دیکھنے والا آدمی ڈر گیا اور اسے لگا کہ شاید یہ کوئی خلائی مخلوق ہے جو جنگل میں اکیلی ادھر ادھر گھوم رہی ہے. آدمی نے پہلے تو ایک گہرا سانس لیا اور پھر دوبارہ اپنے گھر کی کھڑکی سے اس ہرن پر غور کیا. ساتھ ساتھ یہ اپنے موبائل کے زریعے اس عجیب دکھائی دینے والے جانور کی تصاویر بھی لیتا رہا. تھوڑی دیر غور کرنے کے بعد آدمی کو معلوم ہوا کہ یہ جانور دراصل ایک ہرن ہی ہے لیکن اسکا چہرہ کسی گول لکڑ جیسی شہ میں پھنسا ہے.

آدمی نے فوراً وائیلڈ لائف ریسکیو ٹیموں کو کال کی اور انھیں سارے ماجرے سے آگاہ کیا. ریسکیو ٹیم جب جنگل پہنچی تو بیچارہ ہرن جسکو صحیح سے دکھائی بھی نہیں دے رہے تھا ادھر ادھر درختوں کی ٹکر کھاتے هوئے گھوم رہا تھا. ریسکیو والوں نے پہلے تو اس ہرن کو قابو کیا اور مختلف آلات کی مدد سے اسکے چہرے پر چپکی ہوئی لکڑ اتاری. ہرن کے چہرے پر کچھ زخم بھی تھے جن پر مرہم لگائی گئی.

ہرن کو آزاد کرنے سے پہلے ریسکیو ٹیم نے ہرن پر ایک جی پی ایس (GPS) ڈیوائس بھی لگا دی تاکہ انھیں پتا چل سکے کہ کل کلاں کو اگر ہرن کے زخم صحیح نہیں ہوتے اور ہرن اپنے جھنڈ سے جدہ اس جنگل میں مارا مارا پھرے تو جی پی ایس کی مدد سے فوراً اس تک پہنچا جائے اور اسے مزید طبی امداد دی جائے. کیونکہ جب بھی کوئی ہرن بیمار یا زخمی ہو جاتا ہے تو وہ اپنے جھنڈ میں واپس نہیں جاتا اور اکیلا رہنا پسند کرتا ہے.

تھوڑے دن گزرنے کے بعد جی پی ایس ڈیوائس میں بار بار یہی سگنل ملتا رہا کہ ہرن اسی جگہ پر موجود ہے اور ایک ہی دائرے میں بار بار گھومتا جا رہا ہے. اسکے علاوہ جنگل کے قریب موجود بعض گھر والے بھی ریسکیو دفتر کال کر کے بتاتے رہے کہ ایک بیمار سا ہرن لڑکتا ہوا آس پاس پھرتا رہتا ہے.

ریسکیو ٹیمیں جب دوبارہ اس ہرن کے پاس پہنچیں تو ہرن کی حالت مزید خراب تھی. اسکے جسم میں شدید کمزوری تھی اور سانس بھی صحیح سے نہیں آرہا تھا. ریسکیو ٹیم نے اس ہرن کو 600 ایم ایل کے قریب انجیکشن دیے جسکے بعد ہرن میں طاقت آئی اور سانس وغیرہ بلکل صحیح ہو گئی.

وائیلڈ لائف ریسکیو والوں کے مطابق اس دن کے بعد سے یہ ہرن بلکل ٹھیک ہو چکا ہے اور اپنے جھنڈ کے ساتھ دور جنگل (یعنی انسانی آبادی سے دور) رہ رہا ہے.

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے